147

بھارت کی آبی دہشت گردی، دریائے ستلج میں زہریلا پانی چھوڑدیا، زہریلی مچھلیوں کی فروخت شروع۔ موذی مرض پھیلنے کا خدشہ

لاہور:بھارت نے انسانیت سوز اور گھٹیا ترین حرکت کرتے ہوئے دریائے ستلج میں زہریلا پانی چھوڑدیا ہے، ذرائع کے مطابق پاک پتن کے قریب بھارت کی جانب سے دریائے ستلج میں زہریلی پانی چھوڑ دیا ہے جس سے بڑی تعداد میں مچھلیاں اور دیگر آبی حیات ہلاک ہوگئی ہے۔ دوسری جانب پاک پتن میں مقامی تاجروں نے زہریلی مچھلیوں کی فروخت مارکیٹ میں شروع کردی ہے جس سے موذی امراض پھیلانے کا خدشہ ہوگیا ہے، ترجمان پنجاب فوڈ اتھارٹی حافظ قیصر عباس کا کہنا ہے کہ ڈی جی فوڈ اتھارٹی نے زہریلی مچھلیوں کی فروخت کا نوٹس لے لیا ہے اور انھوں نے مردہ مچھلیوں کی فروخت پر سخت کارروائی کے احکامات جاری کردیئے ہیں۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں