34

نوجوان نے جان ہتیھلی پر رکھ کر دریائے سوات سے کبوتر کی جان بچائی

سوات: سوات میں ایک زخمی کبوتر دریائے سوات میں گرگیا اور پروں کے کیلے ہونے کی وجہ سے اڑنے کے قابل نہ رہا، ایسے میں چند مقامی لوگوں کی نظر اس لاچار کبوتر پر پڑگئی اور انھوں نے اسے بچانے کا فیصلہ کرلیا، ان لوگوں نے فوری طور پر ایک رسے کا انتظام کیا رسی کی مدد سے ایک نوجوان مشکل گذار پہاڑی سے نیچے اترا ۔اور کبوتر کو بحفاظت اپنے ہاتھوں میں لے لیا

،

وڈیو میں دیکھا جاسکتا ہے کہ واپسی میں نوجوان ایک ہاتھ سےکبوتر کو پکڑ کر رسی کی مدد سے اوپر آنے کی کوشش کرتا ہے تو توازن کھوبیٹھتا ہے، ایسے میں نوجوان بڑی تدبیر احتیاط اور محبت سے کبوتر کا بازو اپنے منہ میں دبا کر باآسانی اوپر آجاتا ہے، سوشل میڈیا پر ہزاروں لوگوں نے نوجوان کے اس اقداام کو سراہا وہیں لطیفے بھی بنے ہیں کہ، خان صاحب نے جہاں رسی انتظام کیا تھا وہیں کسی تھیلے کا انتظام بھی کرلیتے، مقامی لوگ جو مہم جوئی میں شریک تھے ان کا کہنا ہے کہ ایمرجنسی میں رسی کا ہی انتظام ہوسکا، کوئی تھیلا یا بیگ میسر نہیں تھا،ہمارے پیش نظر کبوتر کو بحفاظت نکالنا تھا وہ ہم نے کرلیا، انھوں نے کہاکہ کبوتر خیریت سے ہے تاہم کچھ زخمی ہے اس لیے اس کا علاج کیا جارہا ہے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں