41

موٹروے پرایک بے بس عورت کا گینگ یپ

لاہور: گجرپورہ کے علاقے میں 2 ‘ڈاکوؤں’ نے ایک خاتون کو اس وقت ریپ کا نشانہ بنادیا جب موٹروے پر اپنی گاڑی میں پیٹرول ختم ہونے کے بعد مدد کا انتظار کر رہی تھیں۔خاتون اپنے بچوں کے ہمراہ لاہور سے گوجرانوالہ کا سفر کر رہی تھیں۔ پولیس رپورٹ کے مطابق خاتون نے لاہور-سیالکوٹ موٹروے پر ٹول پلازہ عبور کیا کہ ان کی گاڑی یا تو پیٹرول ختم ہونے کی وجہ سے رک گئی۔اسی دوران خاتون گوجرانوالہ اپنے کزن کو فون کرکے صورتحال سے آگاہ کیا ، ، جنہوں نے انہیں موٹروے پولیس ہیلپ لائن پر مدد کے لیے کال کرنے کا کہا جبکہ وہ خاتون تک پہنچنے کے لیے گھر سے نکل گیا۔
واقعے کی تفصیل سے متعلق پولیس عہدیدار نے دعویٰ کیا کہ 2 مسلح افراد نے خاتون کو اکیلا دیکھا اور اسلحے کے زور پر خاتون اور بچوں کو قریبی کھیت میں لے گئے اور وہاں خاتون کا گینگ ریپ کیا۔ملزمان خاتون سے نقدی، جیولیری اور دیگر قیمتی سامان بھی لے گئے۔ان کا کہنا تھا کہ پولیس نے ملزمان کی تلاش کے لیے ٹیمیں بنا دی ہیں۔پولیس عہدیدار کا بتانا تھا کہ خاتون ڈیفنس ہاؤسنگ اتھارٹی کی رہائشی ہیں اور ان کے شوہر بیرون ملک کام کرتے ہیں۔علاوہ ازیں انہوں نے بتایا کہ خاتون کے رشتے دار کی شکایت پر 2 نامعلوم ڈاکوؤں کے خلاف مقدمہ درج کرلیا گیا ہے۔دوسری جانب وزیراعلیٰ پنجاب عثمان بزدار نے واقعے کا نوٹس لیتے ہوئے انسپکٹر جنرل (آئی جی) پنجاب سے رپورٹ طلب کرلی جبکہ اس معاملے میں 12 مشتبہ افراد کو گرفتار بھی کرلیا گیا۔پنجاب حکومت کے ٹوئٹر ہینڈل کے مطابق وزیراعلیٰ پنجاب نے موٹروے کے قریب خاتون سے زیادتی کے واقعے نوٹس لیا ہے اور آئی جی پولس سے رپورٹ طلب کرلی ہے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں