Larkana Police Inspector 46

لاڑکانہ میں پیپلزپارٹی رہنماکی کھلے عام بدمعاشی، انسپکٹر اصغر پر بہیمانہ تشدد

لاڑکانہ میں پیپلزپارٹی کے رہنماءنے پولیس آفیسر اصغر پر بہیمانہ تشدد کیا اور پولیس کی وردی بھی تار تار کردی، پولیس آفیسر نے اعلی حکام کو بھی باخبرکیا لیکن انصاف نہ ملنے پر غیرت مند آفیسر نے دلبرداشتہ ہوکر خودکشی کی کوشش بھی کرڈالی، تفصیلات کے مطابق لاڑکانہ میں اے ایس آئی اصفر مغیری نے چند منشیات فروشوں کو گرفتار کرلیا جس پر پیپلزپارٹی کا مقامی رہنماءذوالفقار جاکھرانی آگ بگولہ ہوگیا اور اس نے تھانے میں گھس کر اے ایس آئی اصفر مغیری پر نہ صرف تشدد کیا بلکہ اس کی وردی بھی پھاڑ ڈالی، ایماندار پولیس آفیسر ان بااثر افراد کے سامنے بے بس ہوگیا اور کچھ نہ بگاڑ سکا، انسپکٹر اصغرمغیری نے اعلیٰ پولیس افسران سے اس واقعہ کی شکایت کی تومتعلقہ اعلی حکام نے مجرمانہ خاموشی اختیار کی اور بااثر رہنما کے خلاف کوئی کارروائی نہیں کی،اصغر مغیری نے دلبرداشتہ ہوکر اپنے آپ کو زخمی کرلیا لیکن ان کے ساتھیوں نے انھیں بروقت اسپتال پہنچایا ، آخری خبریں آنے تک ان کی حالت خطرے سے باہر بتائی جاتی ہے۔
واضح رہے کہ پیپلزپارٹی سے تعلق رکھنے والے ان بااثر لوگوں نے وزیراعظم عمران خان کی لاڑکانہ آمد کے موقع پر ان کے پروگرام کو سبوتاژکرنے کی کوشش کی تھی لیکن مقامی انتظامیہ نے اس وقت بھی خاموشی اختیار کررکھی، اگر اس موقع پر ان کے خلاف ایف آئی آر درج کرلی جاتی تو آج ان بدمعاشوں کے ہاتھ پولیس کے گریبان تک نہیں پہنچ پاتے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں