29

سندھ میں بھی اسمارٹ لاک ڈاؤن کا فیصلہ

سندھ حکومت نے کرونا وائرس کے بڑھتے ہوئے کیسز کی وجہ سے کراچی اور اندرون سندھ میں اسمارٹ لاک ڈاؤن کا فیصلہ کرلیا ہے ، فیصلے کے تحت لاک ڈائون پندرہ اپریل تک جاری رہے گا، لاک ڈائون کے تحت صوبہ بھر میں شادی ہالز۔میں کھانا کھلانے پر پابندی ہوگی۔ شادی کی دعوت میں 300 افراد بلائے جاسکے گے۔ تمام کاروباری مراکز رات 10 بجے بند کرنے ہوں گے۔ ہوٹل ہالز میں ڈائینگ پر پابندی ہوگی۔ دریں اثناء وزیراعلیٰ سندھ سیدمراد علی شاہ کا کورونا وائرس کی صورتحال سے متعلق بیان جاری کیا ہے، مراد علی شاہ نے کہا ہے کہ گزشتہ 24 گھنٹوں میں 8511 نمونوں کی جانچ کی گئی جس میں مزید 171 نئے کیسز رپورٹ ہوئے ، گزشتہ 24 گھنٹوں میں 3 اموات رپورٹ ہوئیں، اموات کی مجموعی تعداد 4461 ہوچکی ہے؛آج مزید 144 مریض صحتیاب ہوئے ہیں ، صحتیاب افراد کی مجموعی تعداد 252857 ہوچکی ہے ۔ اب تک 3152760 نمونوں کی جانچ کی جاچکی ہے ؛اب تک 261581 کیسزرپورٹ ہوچکے ہیں ۔اس وقت 4263 مریض زیر علاج ہیں، 3967 گھروں میں ،9 آئسولیشن سینٹرز میں اور 287 مریض مختلف اسپتالوں میں زیر علاج ہیں، 258 مریضوں کی حالت تشویشناک بتائی گئی ہے ؛ چالیس مریض وینٹی لیٹرز پر ہیں؛
صوبے کے 171 نئے کیسز میں سے 38 کا تعلق کراچی سے ہے؛ ضلع شرقی 24،کورنگی7،ضلع جنوبی 3، ضلع وسطی 2، ملیر اور ضلع غربی میں سے1۔1نئے کیسز رپورٹ ہوئے۔حیدرآباد 19،ٹنڈو محمد خان 17،شہید بے نظیر آباد 14،ٹھٹھہ13، سانگھڑ11، قمبر 8،لاڑکانہ اور سجاول 6۔6،میرپورخاص5،نوشہروفیروز4، جیکب آباد اور خیرپور3۔3، گھوٹکی، ٹنڈو الہیار،عمرکوٹ اور شکار پور 2۔2، جامشورو اور مٹیاری میں سے1۔1 نئے کیسز رپورٹ ہوئے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں