53

برسات کا پانچواں اسپییل، سندھ بھر میں موسلادھاربارش، کراچی میں مختلف حادثات میں 6 افراد جاں بحق

کراچی سمیت سندھ بھر میں مون سون کے پانچوین اسپیل کا آغاز ہو گیا اور صوبے بھر میں موسلا دھار بارشوں کے نتیجے میں کئی علاقے زیر آب جبکہ شہر قائد میں مختلف حادثات میں 6 افراد جاں بحق ہوگئے۔کراچی سمیت سندھ بھر کے بیشتر علاقوں میں گرج چمک کے ساتھ بارش کا سلسلہ جاری رہا اور بعض مقامات پر کالے بادلوں کی وجہ سے دن میں ہی رات کا سماں بن گیا۔
کراچی میں ٹاور، صدر، گلشن اقبال، گلستان جوہر، لانڈھی، بن قاسم ٹاؤن، ملیر، ناظم آباد، نارتھ ناظم آباد، سرجانی، حیدری، لیاقت آباد، اورنگی ٹاؤن، کورنگی، کلفٹن، ایئرپورٹ سمیت متعدد علاقوں میں ہلکی اور تیز بارش ہوئی۔
بارش کے ساتھ ہی کراچی کے کئی علاقوں میں بجلی غائب ہو گئی، جن علاقوں میں بجلی معچل ہونے کی شکایات موصول ہوئیں ان میں گلستان جوہر، فیڈرل بی ایریا، نارتھ ناظم آباد، موسیٰ کالونی، کریم آباد، لانڈھی، کورنگی، ملیر، شاہ فیصل کالونی، صدر، ٹاور سمیت دیگر شامل تھے۔کراچی میں بارش کے دوران مختلف حادثات میں 6 افراد جاں بحق ہوگئے۔
محکمہ موسمیات کے مطابق کراچی میں سب سے زیادہ بارش سرجانی میں 170ملی میٹر ریکارڈ کی گئی جس کے بعد اس کے مختلف علاقے زیر آب آگئے۔اس کے علاوہ نارتھ کراچی میں 88 ملی میٹر، ناظم آباد اور نارتھ ناظم آباد میں 85.6 ملی میٹر, گلشن حدید میں 84 ملی میٹر بارش ریکارڈ کی گئی۔کراچی میں مسرور بیس پر 44.5 ملی میٹر اور سعدی ٹاؤن میں 28.5 ملی میٹر، لانڈھی میں 20.5 ملی میٹر، جناح ٹرمینل میں 18.2 ملی میٹر بارش ریکارڈ ہوئی۔اس کے ساتھ پی اے ایف فیصل بیس میں 14 ملی میٹر اور پہلوان گوٹھ میں 6.7 ملی میٹر بارش ریکارڈ کی گئی۔
محکمہ موسمیات نے مزید کہا تھا کہ جمعے سے پیر تک مضبوط مون سون سسٹم سندھ میں پھیلنے کی توقع ہے، بارش کے اس سسٹم کے زیر اثر کراچی، حیدرآباد، ٹھٹہ، بدین، شہید بے نظیر آباد، دادو، تھرپارکر، میرپور خاص، عمر کوٹ، سانگھڑ، سکھر، لاڑکانہ، لسبیلہ، خضدار، بارخان، ژوب، موسیٰ خیل، لورا لائی، کوہلو اور سبی میں جمعہ سے پیر تک تیز ہواؤں اور آندھی کے ساتھ طوفانی بارشوں کی توقع ہے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں